لاہور میں پاکستان کی دوسری بلند ترین لگژری عمارت بنانے کی تیاریاں

پنجاب میں اپنی نوعیت کی پہلی بلند ترین عمارت کا ڈیزائن اور قزیبلٹی صوبائی حکومت نے اربن یونٹ کو حوالے کردی
لاہور:پاکستان میں جب بھی بلند عمارتوں کا ذکر آتا ہے تو فوری طورپر خیال کراچی کی جانب جاتا ہے ۔ اس میں کوئی شک بھی نہیں کہ کراچی میں نہ صرف ملک بھر میں سب سے زیادہ بلند ترین عمارتیں ہیں ۔ بلکہ ایشیائی ممالک میں بھی اس شہر کو بلند ترین عمارتیں تعمیر کرنے کا اعزاز حاصل ہے ‘ کراچی میں بلند ترین عمارتوں میں بحریہ آئیکون ٹاور‘ ایم سی بی بینک اور حبیب بینک ہیڈ کوارٹر کی عمارتوں کا شمار بلند ترین بلڈنگ میں ہوتا ہے۔ اب ملک کے سب سے بڑے صوبہ پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں ملک کی دوسری بلند عمارت بنانے کا فیصلہ کرلیا گیا ہے ۔ یہ عمارت پر تعیش ہوگی۔ اس میں رہائشی یونٹس اور دفاتر دونوں بنائے جائیں گے ۔ عمارت کی خوبی یہ ہوگی کہ اس میں لاہور کی صدیوں پرانی تہذیب و فن تعمیر کی جھلک بھی محسوس ہوگی۔ پنجاب حکومت کا اس میں اہم کردار ہوگا اس کا ڈیزائن اورفزیبلٹی کی ذمہ داری اربن یونٹ کے حوالے کردی ہے۔ یہ عمارت کینال روڈ پر تعمیر کی جائے گی۔اربن یونٹ کے سی او خالد شیر دل اورنجی کنٹرکشن کمپنی کے صدر زمان نے معاہدے پر دستخط کردیئے اس بلند عمارت میں ایک چھت تلے تمام سہولیات مہیا کی جائیں گی اس طرح کی عمارتوں سےشہری علاقوں میں آبادی کے دبائو میں کمی لانے میں مدد ملے گی۔
 

Enquiry Now

Google Rating

4.8

REDBOX Estate Karachi

4.8